کراچی میں خواتین کو چاقو سے زخمی کرنے والے ملزم نے دہشت پھیلادی

شارع فیصل اورگلستانِ جوہر پولیس مقدمات درج کرکے متاثرہ خواتین کے بیان ریکارڈ کرے گی: فوٹو: فائل

 کراچی: گلستانِ جوہرمیں خواتین کو چاقوکے وارکرکے زخمی کرنے والا ملزم کئی دن گزرنے کے باوجود پولیس کے شکنجے میں نہ آسکا۔
ذرائع کے مطابق کراچی کے علاقے گلستانِ جوہرمیں موٹرسائیکل پرسواردوافراد اچانک نمودارہوتے ہیں اور خواتین کو چاقو کے وار کرکے زخمی کرکے فرار ہوجاتے ہیں، کئی روز گزرنے کے باوجود بھی علاقے کی پولیس ملزمان تک پہنچنے میں کامیاب نہیں ہوسکی ہے۔
ایس پی گلشنِ اقبال غلام مرتضیٰ بھٹو کے مطابق متاثرہ خاندان پولیس سے تعاون کررہے ہیں، پولیس نے ایک مشکوک شخص کو حراست میں لیا تھا، جسے تفتیش کے بعد چھوڑ دیا گیا۔ پولیس کے مطابق 25 اور26 ستمبرکو ہونے والے چار واقعات میں ایک ہی ملزم ملوث ہونے کا امکان ہے، شارع فیصل اورگلستانِ جوہر پولیس مقدمات درج کرکے متاثرہ خواتین کے بیان ریکارڈ کرے گی اورمیڈیکل رپورٹ بھی حاصل کی جائے گی۔
دوسری جانب متاثرہ خاندان، پولیس حکام سے ملزم کو جلدکیفرِکردارتک پہنچانے کی اپیل کررہے ہیں، ایک زخمی لڑکی کی والدہ  نےاپیل کی ہے کہ ہم غریب ہیں اورسرکاری خرچ پربیٹی کا علاج کرایا جائے۔ چاقو کے وارسے زخمی 13 سالہ لڑکی نے بتایا کہ اتنا اچانک حملہ ہوا کہ اسے کچھ سمجھ ہی نہ آیا کہ اس کے ساتھ کیا ہوا۔

Share on Google Plus

رابطہ کریں:

ہمارا کوئی بھی دوست ہم سے کمنٹ کے ذریعے بھی رابطہ کر سکتا ہے۔ہم اپنی پہلی ہی فرصت میں آپ کے سوالات کا جواب دیں گے۔
ایک تبصرہ شائع کریں